فضل الرحمٰن کے ہوتے ہوئے یہودیوں کو پاکستان کے خلاف سازش کی کیا ضرورت ہے۔وزیراعظم عمران خان کی آزادی مارچ پر کڑی تنقید

گلگت بلتستان (انمول نیوز) وزیراعظم عمران خان نے جے یو آئی (ف) کے آزادی مارچ کو کڑی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ فضل الرحمٰن کے ہوتے ہوئے یہودیوں کو پاکستان کے خلاف سازش کی کیا ضرورت ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے گلگت بلتستان میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اسلام آباد میں جے یو آئی (ف) کے آزادی مارچ میں بڑی تعداد میں لوگ جمع ہیں، وہ کس سے آزادی لینے اسلام آباد آرہے ہیں، میڈیا جاکر مظاہرین سے پوچھے وہ کس سے آزادی لینے آئے ہیں، پی پی پی والے مہنگائی کی بات کریں گے، ن لیگ والوں کو پتہ ہی نہیں ہوگا کہ وہ مارچ میں کیوں ہیں، جے یو آئی والے کہیں گے یہودی اسلام آباد پر قبضہ کر رہے ہیں، فضل الرحمٰن کے ہوتے ہوئے یہودیوں کو سازش کی کیا ضرورت ہے، ہندوستان سمیت ملک کے سارے دشمن فضل الرحمٰن کے آزادی مارچ سے خوش ہیں، ہندوستانی میڈیا آزادی مارچ دکھا رہا ہے، ایسا لگ رہا ہے جیسے فضل الرحمٰن بھارتی شہری ہے۔

عمران خان نے کہا کہ یہ لوگ اسلام کو نقصان پہنچا رہے ہیں، فضل الرحمٰن کو دیکھ کر اسلام کی طرف کوئی نہیں آئے گا بلکہ اسلام کو چھوڑ دے گا، آزادی مارچ میں جتنے دن مرضی بیٹھنا ہے بیٹھیں، کھانا ختم ہوجائے گا تو وہ بھی دیں گے لیکن این آر او نہیں دیں گے، باری سب کی آئے گی، دنیا ادھر ادھر ہوجائے میں انہیں جیلوں میں ڈالوں گا۔

قبل ازیں وزیراعظم عمران خان  نے گلگت بلتستان کے یوم آزادی پر خطاب کرتے ہوئےکہا  کہ پاکستان اللہ کا تحفہ ہے۔ ہمیں مدینہ کی ریاست کے اصولوں پر چلنا ہے۔وزیراعظم نے شہریوں کو یومِ آزادی کی مبارک باد دی اور کہا پاکستان کے دیگر علاقوں میں موجود افراد نہیں جانتے کہ 1947 میں گلگت بلتستان میں کیا ہوا تھا۔