عماد وسیم کی جارحانہ بلے بازی، قومی ٹیم ٹور میچ میں کامیاب

ورلڈ کپ کے آغاز سے قبل انگلینڈ کے دورے پر موجود قومی کرکٹ ٹیم نے عماد وسیم کی جارحانہ سنچری کی مدد سے کینٹ کی ٹیم کو باآسانی 100 رنز سے شکست دے دی۔

پاکستان کے کپتان سرفراز احمد نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا تو دونوں اوپنرز امام الحق اور فخرزمان نے 92 رنز کا آغاز کیا۔

امام الحق 39 رنز بناکر آؤٹ ہوئے جس کے بعد بابراعظم صرف 9 رنز کا اضافہ کرپائے تاہم فخرزمان کے علاوہ حارث سہیل نے بھی ذمہ دارانہ بلے بازی کا مظاہرہ کیا۔

فخرزمان 76 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے تو ٹیم کا اسکور 138 رنز تھا جس کے بعد کپتان سرفراز 152 کے اسکور پر پویلین لوٹ گئے اور تجربہ کار شعیب ملک بھی صرف 4 رنز کا اضافہ کر پائے۔

حارث سہیل اور عماد وسیم چھٹی وکٹ پر طویل شراکت قائم کی اور ٹیم کا اسکور 164 سے 303 رنز تک پہنچادیا اس دوران حارث سہیل 75 رنز کی اننگز کھیل کر ہیرس کی گیند پر آؤٹ ہوئے۔

عماد وسیم نے ناقابل شکست 117 رنز بنائے اور ٹیم کو مقررہ اوورز میں سات وکٹوں پر 358 رنز کے مجموعے تک پہنچادیا۔

انگلینڈ کے باؤلر عمران قیوم بہترین کارکردگی دکھاتے ہوئے 4 وکٹیں حاصل کیں۔

کینٹ کی ٹیم 358 رنز کے ایک بڑے ہدف کے تعاقب میں پوری ٹیم 258 رنز بنا کر آؤٹ ہوئی۔

پاکستانی باؤلرز کی شان دار کارکردگی کی بدولت کینٹ کے اوپنرز بالترتیب 7 اور 2 بنا کر آؤٹ ہوئے تاہم رابنسن نے 49 رنز بنا کر ٹیم کو ہدف کے قریب لانے کی کوشش لیکن انہوں نے 76 گیندوں کا سامنا کیا۔

بلیک نے جارحانہ انداز میں سب سے زیادہ 89 رنز بنائے اور انہوں نے صرف 48 گیندوں کا سامنا کیا لیکن دیگر بلے باز بڑا اسکور کرنے میں ناکام رہے۔

کینٹ کی پوری ٹیم 45 ویں اوور میں 258 رنز بنا کر آؤٹ ہوئی اور 100 رنز سے شکست کا سامنا کرنا پڑا۔

یاسر شاہ نے سب سے زیادہ 3 وکٹیں حاصل کیں ان کے علاوہ فہیم اشرف، حسن علی اور فخر زمان نے 2،2 کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔

قومی ٹیم اپنا اگلا ٹور میچ نوٹنگھم شائر کے خلاف 29 اپریل کو نارتھمپٹن اور تیسرا ٹور میچ یکم مئی کو لیسسٹر میں کھیلے گی۔

خیال رہے کہ پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان سیریز کا واحد ٹی ٹوئنٹی 5 مئی کو کارڈف میں کھیلا جائے گا جس کے بعد 8 مئی کو ایک روزہ سیریز کا آغاز ہوگا۔