سیاسی ٹاک شوز، اینکرز پر متنازع بیان پر رمیز راجا کو تنقید کا سامنا

قومی کرکٹ ٹیم کےسابق کھلاڑی اور کمنٹیٹر رمیز راجا سیاسی ٹاک شوز پر تنقید کرنے اور اپنے بیان کی وضاحت دینے پر سوشل میڈیا صارفین کی توجہ کا مرکز بنے ہوئے ہیں، جہاں بیک وقت ان کے حق میں اور مخالفت میں آواز اٹھائی جارہی ہے۔

دو روز قبل رمیز راجا نے وزیراعظم عمران خان پر کی جانے والی تنقید سے متعلق سماجی روابط کی ویب سائٹ ٹوئٹر میں اپنے پیغام میں کہا تھا کہ ’سیاسی پروگراموں اور اینکرز کے ساتھ کیا مسئلہ ہے؟ جو اپوزیشن کے موقف کو پیش کررہے ہیں جنہوں نے پاکستان کو نقصان پہنچایا‘۔

انہوں نے کہا کہ ’اگر عوام کو قیمتوں میں اضافہ زیادہ لگ رہا ہے تو وہ انہیں ووٹ دے کر 10 سال کے لیے اقتدار میں لانے پر اس کے مستحق ہیں‘۔

رمیز راجا کے اس ٹوئٹ پر کافی تنقید کی گئی، معروف صحافی اویس توحید نے رمیز راجا کے اس ٹوئٹ کے جواب میں کہا کہ ’70 اور 80 کی دہائی کے عوام آپ کے بھائی وسیم راجا کے شیدائی تھے، جو بڑے باصلاحیت، اعلیٰ تعلیم یافتہ اور سیاسی بوجھ رکھنے والے شخص تھے، افسوس کہ آپ میں ان صلاحیتوں کی کمی ہے، سیاست کے میدان میں بیان بازی کرنا جس کے بارے میں آپ کچھ نہیں جانتے ہوں، یہ بدقسمتی ہے۔


معروف صحافی و تجزیہ کار مظہر عباس نے کہا کہ ’رمیز، اپنا بیٹنگ آرڈر تبدیل کرنے کی کوشش نہ کریں اور کپتان کو ان کی ذمہ داری ادا کرنے دیں، آپ جہاں ہیں، وہیں اچھے ہیں، اپنی زندگی کا لطف اٹھائیں‘۔